HomeHeadlinesدولت بیگ اولڈی

Comments

دولت بیگ اولڈی — 1 Comment

  1. شمشال، خنجراب اور سوست کبھی بھی چین کا حصہ نہیں رہے ہیں۔ یہ معلومات غلط ہیں۔ حقیقت یہ ہے کہ رسکم اور یارقند میں بھی ہنزہ زمینیں تھیں، بلکہ ہنزہ کی شاہی خاندان کے کچھ افراد کی موروثی جاگیریں اب بھی تاشقرغن میں موجود ہیں۔

    خنجراب اور سوست صدیوں سے ریاستِ ہنزہ کا حصہ رہے ہیں۔ 1947تک اس علاقے کے چین کے قبضے میں ہونے کی معلومات مکمل لغو ہے۔ یاد رکھیں کہ ہنزہ کی ریاست 1974 تک قائم رہی۔

    میر آف ہنزہ جب سقوط ہنزہ و نگر کے بعد علاقہ چھوڑ کر فرار ہوگیا تو یارقند میں اپنی ہی جاگیر میں رہنے لگا۔ ریاست ہنزہ کی سرحدیں پامیر کے علاقے تغدمباش اور بوزوئے گمبیز تک پھیلی ہوئی تھیں۔

Leave a comment