HomeNewsBrief NewsOpposition to MoU shows sickmindedness, says lawyer

Comments

Opposition to MoU shows sickmindedness, says lawyer — 3 Comments

  1. میری ذاتی رائے یہ ہے کہ اس ایم او یو کے حوالے سے چترال میں آل پارٹیز کانفرنس بلائی جائے،جس میں تمام پارٹیوں کے ضلعی سربراہان اوروکلاء برادری کے نمائندے شامل ہونا چاہئے اور اس کانفرنس میں جو بھی قرارداد منظور ہوجائے اس پر فوراً عملدر آمد ہونا چاہئے۔ اس وقت چترال کی تمام سیاسی سماجی اور وکلا برادری کی اکثریت اس ایم او یو کی مخالفت کر رہی ہے۔جے یو آئی، جماعت اسلامی،پاکستان مسلم لیگ ن ،آل پاکستان مسلم لیگ اور پولو ایسوسی ایشن کے عہدیداروں نے اس کے خلاف پریس کانفرنسیں بھی کی ہیں۔اس ایم او یو کو فواً کینسل ہونا چاہئے دیگر صورتوں میں چترال کی پوزیشن روز بروزکمزور ہوتی جا رہی ہے۔اور اس کا فائندہ گلگت بلستان میں سرگرم ایک مخصوص گروہ حاصل کر رہا ہے۔ اطلاعات یہ بھی ہیں کہ گلگت بلتستان میں بھی سیمینار کا انعقاد کرنے کی تیاریاں ہو رہی ہیں۔اس سیمینار سے پہلے چترال کا موقف واضح ہونا چاہئے۔

  2. وکیل صاحب کی وکالت کے صدقے، ذرا انسے کوئی یہ پوچھے کہ اگر کسی جگہ کو متانزعہ بنانا ہو یا اپنی ملکیت ثابت کرنا ہو تو اسکے لئے سب سے پہلے کیا قدم اٹھایا جاتا ہے؟
    وکیل صاحب ذرا یہ بھی وضاحت کرتے تو اچھا ہوتا کہ گلگت بلتستان کے صوبائی حکومت کے تمام مطالبات تو مان لئے گئے مگر بدلے میں چترال (خیبر پختونخوا) کو کیا ملا؟
    وکیل صاحب یہ بھی ذرا وضاحت کرتے تو کیا ہی اچھا ہوتا کہ کسی بھی جائیداد کے مشترکہ انتظام کا مقصد اسکے مشترکہ ہونیکی دلیل ہوتی ہے کہ نہیں؟
    وکیل صاحب اور ماہنامہ شندور کے مدیر اور ہمارے ایم پی اے یہ کہتے ہیں کہ شندور کو متنازعہ نہیں بنایا گیا ہے تواگر بات یہی ہے تو پھر گلگت بلتستان پولیس، گلگت سکاؤٹس اور گلگت انتظامیہ مختلف امور میں شریک کیوں ہے؟ کیایہ اس بات کو واضح کرنے کے لئے آپ لوگوں نے گلگت والوں کو برابر کا حصہ دار مان لیا ہے۔
    خدارا ہمیشہ کیلئے خود کو عقل کل سمجھنے کی روش کو ترک کریں اور حقیقت کو تسلیم کرلیں کہ یہ غلط ہوا ہے۔
    آپ کچھ وقت کیلئے کچھ لوگوں کو بیوقوف تو بنا سکتے ہیں مگر ہمیشہ کیلئے سب لوگوں کو بے وقوف نہیں بنا سکتے۔

  3. مسٹر رحمت ولی صاحب آپ بار بار اس کے حق میں بیان دے رہے ہیں آپ پہلے گلگت بلتستان کے اخبارات کی شہ سرخیاں اور پروپیگنڈہ مہم کا جائزہ لیجئے۔آپ کو صاف نظر آرہا ہو گا کہ اس ایم او یو سے ان کے لئے پروپیگنڈہ مہم آسان ہو گیا ہے ۔مسٹررحمت ولی صاحب آپ صرف ایک دن وہاں کے ذرائع ابلاغ میں چھپنے والی خبروں کی چھان بین کے لئے نکال لیجئے آپ کو اندازہ ہو گا کہ اس ایم او کی مخالفت کرنے والے صحیح ہیں یا حمایت والے۔