HomeHeadlinesUnforeseen repercussions of two districts

Comments

چترال کی پہلی صاحب دیوان شاعرہ  — 1 Comment

  1. یہ بہت بڑا کارنامہ ہے ۔شاعرہ نے ثابت کر دکھایا کہ چترالی خواتین بھی پروین شاکر بن سکتی ہیں ۔ پیشہ انسان کی مجبوری ہوتاہے ۔ کوئی خاتوں پائیلٹ بنے یا کچھ اور وہ بہت چھوٹی بات ہے لیکن ایک تخلیق کار بن کر اپنے اندر کے انسان کی آنکھ سے معاشرے کو دیکھنا بڑا جگر جوکھو کا کام ہے ۔ میری نظر میں شاعر کا سفر شدید مشکلات سے دوچار ہونے کے بعد نشان منزل کی جانب رواں دواں ہوا ہوگا ۔ اس راستے میں مشکلات بلا شبہ بے شمار ہوں گے لیکن انسان کے قوی
    مضبوط ہوں تو ۔۔ ہاتھ ہے اللہ کا بندہ مومن کا ہاتھ ۔۔۔ ہوتا ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *