Traffic awareness programme aired

CHITRAL, March 31: The Chitral FM-97 radio aired a live programme to create public awareness about traffic laws.
FM ProgramParticipating in the programme, Chitral traffic police in-charge Nasir Ullah, Aman Ullhah of traffic complaint cell along with other officials spoke about different traffic laws. They also responded to live questions coming in from the citizens about different traffic laws.
The residents of Chitral appreciated the police move and said taht such programme should be held regularly in order to enhance public knowledge about the traffic laws and how to follow them.–Bashir Hussain Azad


Print Friendly

چترال کے مستحق افراد میں اشیاء خوردنوش تقسیم

چترال(بشیر حسین آزاد) شندور ویلفیئر ٹرسٹ چترال کراچی کے زیر اہتمام چترال میں چترال کے مستحق افراد میں اشیاء خوردنوش تقسیم۔

charityاُس موقع پر مولانا عبدالشکور ناظم شندور ٹرسٹ نے کہا۔شندور ٹرسٹ عرصہ درز سے چترال یں خدمت انجام دے رہی۔جن میں مستحق افراد کے ساتھ تعاون ،طلبہ کو اسکالرشپ بیوہ گان کے ساتھ مالی تعاون ،ہنگامی حالات کے موقعں پر متاثرین سے تعاون شامل ہے۔اُنہوں نے کہا شندور ٹرسٹ کراچی میں مقیم علماء کی طرف کی چترال کے بے سہارا لوگوں کے لیے ایک عظیم نعمت ہے۔اس نعمت کی قدر کرکے اس کے ترقی کے لیے دعاگورہے ۔مستحق افراد کی طرف سے شندور ٹرسٹ کے ذمہ داروں قاری حبیب الرحمن اور عبدالغفور وغیروں کا شکریہ ادا کیا۔


Print Friendly

رحمت غازی تحریک انصاف چترال کے کنوینئر مقرر

چترال(بشیر حسین آزاد) پاکستان تحریک انساف خیبر پختونخوا کے صدر اعظم خان سواتی نے پارٹی کی ضلعی کابینہ تحلیل کرنے کے بعد رحمت غازی کو پی ٹی آئی چترال کا کنوینئر مقرر کردیا ہے۔

Rahmat Gaziانہیں چترال کی سطح پرپارٹی کو منظم کرنے اور بلدیاتی انتخابات کی تیاریوں کا ٹاسک سونپ دیا گیا ہے۔رحمت غازیسیکرٹری لوکل کونسل بورڈ کے علاوہ محکمہ بلدیات میں مختلف عہدوں پر فائز رہے ہیں۔

پشاور میں میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے رحمت غازی نے بتایا کہ پارٹی قیادت نے ان پر جس اعتماد کا اظہار کیا ہے وہ اس پر پورا اُترنے کی بھرپور کوشش کرینگے۔پارٹی کے تمام کارکنوں کو ایک پلیٹ فارم پر متحد کریں گے اور چترال میں پی ٹی آئی کو سب سے بڑی سیاسی جماعت بنائے گے۔ان کا کہنا تھا کہ وہ چترال کے اہم شخصیات اور کارکنوں کا پی ٹی آئی میں شرکت کا خیر مقدم کریں گے۔


Print Friendly

Student goes missing in Charun

BOONI, March 31: The police and local people have launched a hectic search for a college student who disappeared mysteriously in the Charun village on Monday night.

Initial reports said that the youth, identified as Bahadar Ullah, son of Gulan Zar, who was a third-year student in Peshawar, had come to the village on vacations. His family is settled in Peshawar. The missing man’s jeep was found abandoned at a riverside with the marks of some minor accident. The youth’s sweater was also found at the side of the vehicle. There are rumours that he might have committed suicide or murdered. The police have started an investigation into the incident and are questioning localamily is  residents.–Amir Nayab

 


Print Friendly

DDAC not satisfied with working of govt depts

چترال (بشیر حسین آزاد ) ڈسٹرکٹ ایریا ڈویلپمنٹ کمیٹی چترال کے چیرمین سلیم خان نے چترال میں ترقیاتی منصوبوں سے متعلق اداروں کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار کیاہے ۔ اور متعلقہ اداروں کو چترال میں ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل میں غفلت اور لاپرواہی کا ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے اپنی کارکردگی بہتر بنانے کی تنبیہ کی ہے ۔

پیر کے روز ڈپٹی کمشنر آفس چترال میں سلیم خان کی زیر صدارت ڈیڈک کا اجلاس ہوا ۔ جس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا ۔ کہ چترال میں سی اینڈ ڈبلیو ڈیپارٹمنٹ کی کارکردگی صفر ہے ۔ اس کے آفیسران مختلف بہانوں سے اپنی ذمہ داریوں سے غفلت برت رہے ہیں ۔ جس کی وجہ سے علاقے کے ترقیاتی منصوبے مسلسل تاخیر کا شکار ہو رہے ہیں ۔ اُنہیں اپنی ذمہ داریوں کا ذرا بھر احسا س ہے ۔ نہ وہ ڈیڈک کی میٹنگ میں شرکت کی تکلیف گوارا کرتے ہیں ۔

salimاجلاس میں ڈپٹی کمشنر چترال امین الحق ، ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر عبد الاکرم کے علاوہ مختلف اداروں کے آفیسران اور نمائندے شامل تھے ۔ سلیم خان نے کہا ۔ کہ اس قسم کے محکمانہ لاپرواہی کے نتیجے میں عبد الولی خان بائی پاس روڈ مکمل نہیں کیا جاسکا ہے ۔ اور تاجر و عوام شدید مشکلات کا شکار ہیں ۔ انہو ں نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے تیس جون تک ہر صورت میں بائی پاس ر وڈ مکمل کرنے کی ہدایت کی ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ ہائی سکول شیاقو ٹیک ، ہائر سکینڈری سکول گرم چشمہ ، دروش کالجز ،ایون ہائر سکینڈری سکول سمیت درجنوں دیگر منصوبے ادارے کی کام چوری اور فرض ناشناسی کے باعث تکمیل نہیں ہو پارہے ہیں ۔اگر ٹھیکہ دار ان کی تکمیل میں مسائل پیدا کر رہے ہیں ۔ تو انہیں بلیک لسٹ کیا جائے ۔

انہوں نے کہا ۔کہ متعلقہ آفیسران کا کام حصول کمیشن تک محدود ہو گیا ہے۔ جبکہ چیف منسٹر کے ڈائریکٹیوز کے تحت کمیشن ختم کیا گیا ہے ۔ انہوں نے پبلک ہیلتھ کی خاتون ایکسین کو دروش واٹر سپلائی سکیم کی سائٹ تبدیلی اور پائپ لائن کو شیشی نالے سے پہنچنے والے ممکنہ نقصانات کے حوالے سے عوامی تحفظات سے آ گاہ کیا ۔ اور اسے مکمل محفوظ بنانے کی ہدایت کی ۔ اسی طرح دروش میں واٹر ٹینکی کی تعمیر ، ارندو سکیم میں ساڑے چار ہزار فٹ پائپ بچھا کر پانی کا مسئلہ حل کرنے ،دروش ازردام سکیم ، اور چترال ٹاؤن واٹر سپلائی سکیم کے پانی کا مسئلہ میونسپل کمیٹی کے ساتھ مل کر حل کرنے کی ہدایت کی ۔ جبکہ کاری ہائی سکول اور سینگور کیلئے علیحدہ آبنوشی منصوبہ زیر بحث آئے ۔

اسی طرح پرواک واٹر سپلائی کو اگلے گاؤں تک توسیع کرنے ایون صحن واٹر سپلائی کو نہر غوچھار کوہ کے اندر سے ایون پہنچانے اور گرم چشمہ ہسپتال اور ایژ گاؤں کو پینے کے پانی کی سہولت مہیا کرنے کے حوالے سے فیصلے کئے گئے ۔ اجلاس میں سید آباد ایون میں اور قاقلشٹ میں سٹیڈیم کی تعمیر کے سلسلے میں سائٹ سلکشن پر بحث ہوئی ۔اجلاس میں سول ڈسپنسری اکروئی ارندو اور ایون ہسپتال کی اپگریڈیشن کے سلسلے میں پیش رفت کا ذکر کیا گیا ۔جبکہ لائیو سٹک کے حوالے سے مصنوعی نسل کشی کے سنٹر ز میں اضافے کی ضرورت پر زور دیا گیا ۔ 


Print Friendly

Accord inked to promote Chitrali embroidery, dress desining

DROSH, March 30: An agreement has been reached between the National Vocational and Technical Training Commission (NAVTTC) and the Drosh Institute of Computer and Technical Education (DICTE) for dress designing and traditional Chitrali embroidery work to represent the valley’s culture at international level.
abbasiiiiThe project was sanctioned by the director general NVTTC Peshawar at a total cost of Rs3,838,000/ under the “Short-term skill development course of prime minister’s Hunarmand scheme.”
Managing Director DICTE Irfan Ullah Jan Riza and DG NVTTC Javeed Iqbal signed the documents. Soon the admission for training will be advertised . The DICTE will provide free technical training, hostel, certificates and monthly stipend of Rs2000 to each student.
It is to be noted that DICTE is the only institution which provides quality education, including computer courses and technical education, to both male and female students. The local people and members of the National youth Assembly thanked to Mr. Irfan Ullah Jan for his efforts to provide opportuniteis to the youth of Chitral.–Abbas Hussain


Print Friendly

نمایاں پوزیشن ہولڈر طلباء کو ایوارڈ دینے کی محفل

چترال ( بشیر حسین آزاد )ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر چترال عبد الاکرم نے کہا ہے ۔ کہ رسول اکرم صل اللہ علیہ وآلہ وسلم انسانوں سے بہت محبت کرتے تھے ۔ اور اُن کی عزت کرتے تھے ۔ اس لئے ہمیں چاہیے کہ ہم فروغ اسلام کیلئے لوگوں سے محبت کرنا اور اُنہیں عزت دینا سیکھیں ۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے جامعہ اسلامیہ ریحانکوٹ کی طرف سے امتحانات میں نمایاں پوزیشن ہولڈر طلباء کو ایوارڈ دینے کی محفل میں بطور مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا ۔جس میں سابق امیدوار صوبائی اسمبلی اپر چترال مولانا حسین احمد نے صدر محفل کے فرائض انجام دی ۔ مہتمم مدرسہ و امیر جے یو آئی چترال مولانا عبدالرحمن قریشی ، ڈسٹرکٹ خطیب چترال مولانا فضل مولا ، مولانا مفتی عبد العزیز ،ڈی ایف سی چترال شیرفیاض کے علاوہ علماء مقامی عمائدین اور طلباء کی بڑی تعداد موجود تھی ۔

Madras jpgانہوں نے کہا ۔کہ اغیار نے ایک سازش کے تحت مدرسوں کو دہشت گردی کے ساتھ منسلک کرکے اسلام کو بدنام کرنے کی مذموم کو شش کی ہے ۔ اسلئے اس منفی پہلو کو زائل کرنے کیلئے ہمیں اس قسم کے دینی محافل میں حکومت کے ذمہ دار آفیسروں کو مدعو کرنے چاہیں ۔ تاکہ اُن کو اس حقیقت کا ادراک ہو سکے ۔ کہ مدرسے حصول علم کے ادارے ہیں ۔ اور دہشت گردی کا ان سے کوئی تعلق نہیں ہے ۔

عبد الاکرم نے کہا ۔ کہ اسلام کے پھیلاؤ کیلئے زبان وعلم سے زیادہ اعمال کی ضرورت ہے ۔ کیونکہ عمل کے بے غیر علم بے ثمرشجر کے ہے۔انہوں نے کہا ۔ کہ دور جدید کے تقاضوں کے مطابق ہمیں دینی اور عصری علوم پر مکمل عبور حاصل کرنے کی ضرورت ہے ۔ کیونکہ آنے والا وقت آج کی نسبت زیادہ مشکل ہونے کے خدشات ہیں ۔ مولانا حسین احمد نے اپنے خطاب میں اس امر کا اظہار کیا ۔ کہ دنیا میں انسانوں کیلئے رول ماڈل رسول پاکؐ کی ذات گرامی ہے ۔ آج دنیا میں انسانی حقوق کی جتنی باتیں اقوام متحدہ اور یو رپین ممالک کر رہے ہیں ۔ وہ چودہ سو سال پہلے رسول پاکؐ کا وہ عظیم خطبہ ہے ۔ جسے اُنہوں نے حجتہ الوداع کے موقع پر دیا تھا ۔ انہوں نے کہا ۔کہ دنیا میں دو کروڑ تیس لاکھ حفاظ موجود ہیں ۔ جو کہ مدرسوں کی پیداوار ہیں ۔ اور علم کی یہ روشنی اُس چراغ کا تسلسل ہے ۔ جو غار حرا میں روشن ہوئی تھی ۔

انہوں نے کہا کہ دنیا میں تہذیب و تمدن اور کلچر کے یلغار آئیں گے ۔ لیکن قوم اُس کو کہا جاتا ہے ۔ جو اُس یلغار کے سامنے بند باندھے ۔ اُس کو قوم نہیں کہا جا سکتا ۔ جو ہر یلغار کا حصہ بنے ۔ اس موقع پر مدرسے کے ششماہی امتحان میں نمایاں پوزیشن لینے والے طلباء میں انعامات تقسیم کئے گئے ۔ اور کامیابی پر انہیں مبارکباد دی گئی ۔ خطیب فضل مولا نے اپنے خطاب میں علاقے میں پینے کے پانی اور سیوریج کے مسائل سے متعلق مہمان خصوصی کو آگاہ کیا ۔ اور مطالبہ کیا ۔ کہ اس پر توجہ دی جائے ۔ جس پر ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر نے مسئلے حل کرنے کی یقین دھانی کی ۔ اس بابرکت محفل میں طلباء نے قرآن پاک کی تلاوت کی اور حمد و نعت شریف پیش کرکے حاضریں سے داد وصول کی ۔محفل کی نظامت ممتاز عالم مفتی مولانا شفیق احمد کی 


Print Friendly

Telenor fleecing mobile users in Chitral

Report Zahiruddin
CHITRAL, March 30: The Chitral franchise office of Telenor Pakistan is charging 100 percent extra amount for biometric verification of SIM, complained customers here.
The customers also complained of the indecent behavior of the dealing staff and said they did not pay heed to the customers and when one wants to draw their attention, they resort to using harsh words.
telenorThey said that in utter violation of the decision of Pakistan
Telecommunication Authority (PTA) to charge 10 rupees for biometric verification, they are charging Rs.20 and they turned harsh when someone tries to remind them of the fixed fee.
Requesting not to be named, a medical doctor, said that he left the customer service office seeing the rude behaviour of the staff and got it from a private outlet while he was badly shocked to see the customers being humiliated.
Both the allegations of overcharging for biometric verification and ill treatment of customers proved to be true when this correspondent visited the office in the pretext of getting his SIM verified.
Two salesmen sitting the counter were found gossiping with each other totally ignoring the customers standing in front of them while they were also found charging 20 rupees for the SIM verification.
The salesmen talked rudely to the customers during the course while one of the customers was subjected to ridicule as well.
When the manager, sitting in another adjacent room, was contacted by this correspondent to know his version, he first insisted that the verification charge was 20 but had to retract when it was insisted to produce the written order of the PTA.
When his attention was drawn towards the complaint of misbehviour with customers, he called all the three salesmen to his office and rebuked them saying that he was repeatedly receiving the complaints from the customers.
He came to remind them that ‘customer is our king’ and ‘customer is always right’ but the salesmen were daring enough to have arguments with him.


Print Friendly

پی پی پی چترال کا ضلعی کابینہ بحا ل

چترال (بشیر حسین آزاد) پی پی پی ضلع چترال کے ضلعی صدر ایم پی اے سلیمِ خان نے ہفتے کے روزچودہ افراد پر مشتمل ضلعی کابینہ سے ان کے عہدوں کے حلف لیا

pppجن میں نائب صدور سید برہان شاہ ایڈوکیٹ، جاوید اختر، میردولہ جان، سبحان الدین، نواب خان، جنرل سیکرٹری محمد حکیم خان ایڈوکیٹ ، نائب سیکرٹریز سیف الدین شاہ ایڈوکیٹ، محمد مسلم خان، اکمل بھٹو انفارمیشن سیکرٹری، سید شیر حسین نائب انفارمیشن سیکرٹری، رحمت نذیر ایونٹس سیکرٹری، بشیر احمد خان سیکرٹری فنانس، نورانی خان رابطہ سیکرٹری اور محمد رحمان آفس سیکرٹری شامل ہیں۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ضلعی صدر سلیم خان نے کہاکہ گزشتہ عام انتخابات میں چترال صوبہ خیبر پختونخوا کا واحد ضلع تھا جہاں کارکنوں کی انتھک کوششوں کی وجہ سے پارٹی صوبائی اسمبلیوں کی دونوں نشستوں میں کامیابی حاصل کی تھی اور اسی کارکردگی کی بنا پر پارٹی کے سربراہ آصف علی زرداری کی منظوری سے صوبائی صدرخانزادہ خان نے چترال ضلعے کی کابینہ کو مکمل طور پر بحال رکھا جو کہ ان کے لئے اعزاز کی بات ہے۔ سلیم خان نے کہاکہ پی پی پی چترال میں ایک ناقابل تسخیر سیاسی قوت ہے جس کا کریڈٹ اس کے کارکنوں کو جاتا ہے جو کہ انتہائی نامساعد حالات میں بھی پارٹی کے ساتھ وفاداری نبھاتے ہیں۔ انہوں نے واضح کرتے ہوئے کہاکہ چترال میں پارٹی کے صفوں میں کوئی دراڑ نہیں ہے جبکہ بعض شرپسند عناصر اس کا غلط تاثر دینے کی کوشش کررہے ہیں ۔

سلیم خان نے کہاکہ چترال میں عیدالحسین نام کاکو ئی شخص پیپلز پارٹی میں نہیں ہے جو کہ اپنے آپ کو خود ساختہ صدر ظاہر کررہے ہیں جبکہ ایک سال قبل وہ مسلم لیگ (ق) کا ضلعی صدر تھا۔ انہوں نے کہاکہ عیدالحسین نامی شخص سے اپنی لاتعلقی کے بارے میں پارٹی کی صوبائی قیادت نے پہلے ہی وضاحت کردی ہے اور ان کے ساتھ وہ لوگ شامل ہیں جوکہ گزشتہ الیکشن میں پارٹی کی نامزد امیدوار کے خلاف کام کرنے کی پاداش میں ان کو پارٹی سے خارج کئے گئے تھے۔

سلیم خان نے کہاکہ پی پی پی آنے والی بلدیاتی انتخابات میں بھر پور حصہ لے گی اور تمام وارڈوں میں انتخابات میں حصہ لے گی اور پارٹی کارکنوں کی قربانیوں کا سلسلہ اسی طرح جاری رہا تو پورے چترال میں کلین سویپ کرکے صوبائی اور مرکزی قیادتوں کے سامنے دوبارہ سرخرو ہوں گے۔ انہوں نے کہاکہ صوبے میں پی پی پی نے جے یو آئی اور اے این پی کے ساتھ مل کرسہ فریقی اتحاد بنالی ہے جو کہ چترال میں بھی برقرار رہے گی تاہم کوئی پارٹی اس سے نکلنا چاہے تو اسے اختیار حاصل ہے۔ سلیم خان نے کہاکہ پارٹی کو تحصیلوں اور وارڈوں کی سطح پر دوبارہ منظم کرنے کا کام عنقریب شروع کیاجارہا ہے۔ 


Print Friendly